Amjad Malik’s Poetry



POETRY OF YOUNG BOURANA POET…………… AMJAD MALIK ………….


Amjad poetry6

بہت عرصہ بعد ایک تازہ غزل دوستوں کی نذر۔۔۔

وہ شخص اب میرے گماں میں نہیں رہتا
میں بھی تو اب کچے مکاں میں نہیں رہتا

میں بھی اب مصروف ہوں دیار غیر غیروں میں
وہ بھی تو اب کسی ایک مکاں میں نہیں رہتا

وقت گزرتا ہے تو ہر عکس بھول جاتے ہیں
آئینے پہ بھی باقی کوئی نشاں نہیں رہتا

دیکھو تو گھر کی دہلیز پہ سبزہ ہے اگ آیا
عمر بھر تو میری جاں موسم خزاں نہیں رہتا

ذرہ سا وقت ڈھلنے دو پھر وہ یاد کر کر روئے گا
ساری زندگی سر پہ امجد یہ آسماں نہیں رہتا

امجد ملک

Amjad poetry5

Amjad poetry4

Amjad poetry3

Amjad poetry2

Amjad poetry1

Amjad Poetry 241213

Amjal malik poetry`

amjad poetry

amjad 1



Amjad malik's poetry

Amjad malik’s poetry

4 thoughts on “Amjad Malik’s Poetry

  1. گندم کہ کٹائی کے دن ہیں تو اسلیے ایک دوست کی دوسرے دوست کو ریکویسٹ……..

    جے سنگتی هیں تاں آ ڈهولا میڈی آ کے کنڑک کپا وچ ، بوجهہ لہا ونج
    آیا اوکها وقت تیڈے سنگتی تے تهوڑی آ کے ہلپ کرا ونج، بوجهہ لہا ونج

    گڈیاں تاں میں آپ بندهیساں بس تهریشر توں کڈهواں ونج، بوجهہ لہا ونج
    نہ بهلساں ایهہ احسان تیڈا توں دانڑے گهر سٹوا ونج، بوجهہ لہا ونج

    شاعر نا معلوم

Leave a Reply to shazi Cancel reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <strike> <strong>